Facebooktwittergoogle_plusredditpinterestlinkedinmailby feather 

  دھوکے سے ہوشیار

 
تارکین وطن سے متعلق معاملات میں دھوکہ دہی ایک عام مسئلہ ہے۔ تارکین وطن کے بددیانت ماہرین کا جو اکثر “نوٹاریوز” کہلاتے ہیں، شکار مت بنیں

دھوکے سے بچنے کیلیے ان عمومی ہدایات پر عمل کیجیے:

 

  • التوائی عمل یا شہریت کیلیے درخواست دینے میں مدد کیلیے کسی بھی شخص کو رقم مت دیجیے۔
  • کسی “التوائی فہرست” میں اپنا نام ڈلوانے کیلیے ادائیگی مت کیجیے۔ ایسی کوئی فہرست موجود نہیں ہے۔ .
  • کسی بھی فارم کیلیے ادائیگی مت کیجیے۔ درخواست سے متعلق تمام مواد مفت دستیاب ہے۔ یو ایس سی آئی ایس (USCIS).
  • تارکین وطن کے معاملات کا کوئی ایسا وکیل مت کیجیے جس کے پاس لائسنس نہ ہو۔ اسے لائسنس دکھانے کیلیے کہیے۔ تارکین وطن کے لائسنس یافتہ وکلاء کی تلاش کیلیے یہاں.
  • کسی ایسی درخواست پر دستخط مت کیجیے جس میں غلط معلومات درج ہوں اور کسی سادہ فارم پر دستخط مت کیجیے
  • جب بھی آپ کے معاملے میں کوئی دستاویز داخل کی جائے تو سرکاری اندراج کی رسید یا اسکی ایک نقل ہمیشہ حاصل کی جائے.
  • تحریری معاہدے حاصل کیجیے اور یقینی بنائیے کہ آپکورسید کی ادائیگی ہو خاص طور پر جب آپ نقد رقم ادا کریں
  • گرین کارڈ حاصل کرنے کیلیے کسی کو بھی اپنے لیے کفیل یا شریک حیات “تلاش” مت کرنے دیجیے – یہ غیر قانونی ہے
  • مدد حاصل کرنے کیلیے ہیوسٹن میں تارکین وطن سے متعلق معاملات کی معلومات کیلیے بااعتماد ذریعہ منتخب کیجیے۔.

 

نوٹاریو دھوکے پر مزید معلومات کیلیے